امریکا نے شام پر مزید پابندیاں لگادیں

واشنگٹن ڈی سی امریکا نے شام کے سرکاری عہدیداروں پر مزید اور وسیع تر پابندیاں عائد کرتے ہوئے شامی ادارے ’سائنٹفک اسٹڈیز اینڈ ریسرچ سینٹر‘ (ایس ایس آر سی) کے 271 ملازمین کے اثاثے منجمد کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

غیر ملکی خبر ایجنسیوں کے مطابق امریکا کی جانب سے لگائی گئیں یہ پابندیاں ان کارروائیوں کے ردِعمل میں لگائی گئی ہیں جو شامی فوج نے چند ہفتے پہلے خان شیخون نامی قصبے کو بشارالاسد کے مخالفین کے قبضے سے آزاد کروانے کےلیے کی تھیں اور جن کے نتیجے میں 80 افراد ہلاک ہوئے تھے۔
امریکا نے الزام لگایا کہ اس حملے میں شامی فوج نے اعصابی گیس استعمال کی تھی اور اسی بات کو بنیاد بناتے ہوئے شامی فوج کے ’شعیرات‘ ہوائی اڈے پر حملہ بھی کردیاتھا لیکن شام اور امریکا میں تنازعہ یہیں پر نہیں رکا بلکہ گزشتہ روز امریکی وزارتِ خزانہ نے اعلان جاری کیا کہ اس نے ’ایس ایس آر سی‘ کے 271 ملازمین پر غیر روایتی ہتھیار ڈیزائن کرنے، بنانے اور فراہم کرنے کے جرم میں پابندیاں عائد کردی ہیں جن کی رُو سے ان کے اثاثے منجمد کردیئے گئے ہیں اور کوئی بھی امریکی ان سے کسی قسم کا لین دین نہیں کرسکے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں